Low Diabetes Reasons | شوگر لو ہونے کی علامات

شوگر (diabetes) کے مختلف اقسام ہو سکتے ہیں، لیکن عموماً شوگر کے مریضوں کو مندرجہ ذیل علامات محسوس ہوتی ہیں۔ ان علامات کی شدت اور تعداد شخص سے شخص تک مختلف ہو سکتی ہے۔

زیادہ پیاس (Polydipsia): شوگر کے مریضوں میں زیادہ پیاس محسوس ہوتی ہے۔ روزانہ زیادہ مقدار میں پانی پینے کی خواہش ہوتی ہے اور پانی کے بعد بھی پیاس نہ کچھ کم ہوتی ہے۔

زیادہ بولنا (Polyuria): شوگر کے مریضوں میں پیشاب کی مقدار زیادہ ہوتی ہے۔ ایک دن میں کئی بار پیشاب آنا اور رات کو بھی آنے کی خواہش ہوتی ہے۔

زیادہ بھوک (Polyphagia): شوگر کے مریضوں میں زیادہ بھوک محسوس ہوتی ہے۔ بغیر کسی معقول وجہ کھانے کی خواہش بڑھ جاتی ہے اور وہ زیادہ کھاتے ہیں لیکن پھر بھی احساس ہوتا ہے کہ بھوک نہیں بجھتی۔

وزن کمی: شوگر کے مریضوں میں وزن کم ہونے کی صورت میں تیزی سے وزن کم ہونا ایک علامت ہو سکتی ہے۔

تھکاوٹ (Fatigue): شوگر کے مریضوں میں تھکاوٹ اور کمزوری کا احساس رہتا ہے، جو کام کرنے کی قوت کو کم کر دیتا ہے۔

جلدی مسائل: شوگر کے مریضوں میں جلدی مسائل ممکن ہیں جیسے کہ خشک جلد، کھجلی، اور زخموں کی دیر سے بھرنے والی خصوصیت۔

بصری مسائل: شوگر کے مریضوں میں بصری مسائل بھی ہو سکتے ہیں، مثلاً دھندلا دیکھنا یا بصریت کم ہونا۔

یہ علامات شوگر کے ابتدائی مراحل میں ظاہر ہوتی ہیں اور جلدی انہیں نظرانداز نہ کیا جائے۔ اگر آپ میں یہ علامات محسوس ہوں تو اپنے ڈاکٹر سے رجوع کریں اور شوگر کے ٹیسٹ کروائیں تاکہ درست تشخیص اور علاج ممکن بن سکے۔

ذیابیطس کے مریض کی اچانک شوگر لیول کم ہونے کی علامات و علاج

ذیابیطس کے مریض کے شوگر لیول کا اچانک کم ہونا ہو سکتا ہے جو ایک خطرناک صورتحال ہے اور فوری طبی اہلکار کی مدد ضروری ہوتی ہے۔ اس کو ہائپوگلائیسیمیا یا لو بلڈ شوگر کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔

اچانک شوگر لیول کم ہونے کی علامات:

تھکاوٹ اور کمزوری

پسینے کا بڑھا ہونا

چکر آنا یا بے ہوشی کا احساس

جلد کی پیلاپن اور ہلکی زردی

تیز دل کی دھڑکن یا دل کی دھڑکن کا رک جانا

رات کو بیدار ہونے کی ضرورت

کمزور ہوئے ماحول کے سامنے حفاظت نہ کر پانا

اچانک شوگر لیول کم ہونے کا علاج:

فوراً کچھ میٹھا یا شیریں چیز کھانا: جیسے کہ شکر، مٹھائی، عسل، جوس، یا کچھ میٹھا پانی پینا۔

گلوکوز گیلون بھر: شوگر لیول کم ہونے کی صورت میں فوری ایمرجنس طبی اہلکار کی مدد کے لئے گلوکوز کے گیلون بھر کے ساتھ ہونا ضروری ہے۔

انجیکشن: اگر مریض غائب ہو گیا ہے یا ایمرجنس کی صورت میں انجیکشن دے دیا جا سکتا ہے جو کے ہسپتال میں طبی اہلکار کر سکتے ہیں۔

بڑی شوگر لیول کمی کی صورت میں ہسپتال میں داخلہ: اگر شوگر لیول کم ہونے کی صورت بہت بڑی ہے تو مریض کو ہسپتال بھیج دیا جاتا ہے تاکہ متخصص طبی اہلکار ان کا دیکھ بھال کریں۔

مہمان نوازی:
یہ کامیاب عمل اس بات پر منحصر ہوتا ہے کہ مریض اور ان کے گھر والے ہائپوگلائیسیمیا کے علامات اور علاج کے بارے میں آگاہ ہوں۔ اگر آپ یا کوئی اور آپ کے قریبی شوگر کے مریض ہیں تو شوگر کو کنٹرول کرنے اور اچھی صحت کے لئے اپنے ڈاکٹر کی رہنمائی پر عمل کریں۔

بیطس کے مریض کی اچانک شوگر لیول کم ہونے کی علامات و علاج

وہ باتیں جو ذیایبطس کے مریضوں کو معلوم ہونی چاہئیں

ذیابیطس کے مریضوں کو اپنے صحت کی حفاظت کے لئے کئی اہم باتیں معلوم ہونی چاہئیں۔ نیچے دی گئی باتیں ذیابیطس کے مریضوں کے لئے ضروری ہیں:

اپنے شوگر کو کنٹرول کریں: روزانہ شوگر کی چیک کریں اور اپنے ڈاکٹر کے حکم کے مطابق اپنی دوائیں استعمال کریں اور اپنی غذائیں برابری سے کھائیں۔

صحیح خوراک: مناسب غذائیں کھائیں جو شوگر کو کنٹرول کرنے میں مدد فراہم کریں۔ میٹھے اور شیرین چیزوں کی تناول کم کریں اور صحیح کاربوہائیڈریٹس، پروٹین اور چربیوں کا استعمال کریں۔

روزانہ مشقت کریں: روزانہ مشقت کرنا شوگر کو کنٹرول کرنے اور بہتر صحت کے لئے بہتر ہوتا ہے۔ مشقت کرنے سے خون میں شوگر کی سطح کم ہوتی ہے اور وزن کو بھی کنٹرول میں رکھا جا سکتا ہے۔

ڈاکٹر کی رعایت کریں: اپنے ڈاکٹر کی مشورہ دادی کو یقینی بنائیں اور ان کے حکم کے مطابق علاج کریں۔

روزانہ اپنی آنکھوں، پاؤں اور جلد کی دیکھ بھال کریں: شوگر کے مریضوں کو آنکھوں، پاؤں اور جلد کے مسائل کا خصوصی خیال رکھنا چاہئیے۔

وہ باتیں جو ذیایبطس کے مریضوں کو معلوم ہونی چاہئیں

اپنی شوگر کے لحاظ سے احتیاطی تدابیر: اگر شوگر لیول اچانک کم ہو جائے تو میٹھا کھانے سے بچیں اور اپنے پاس اینڈوکرائنالوجسٹ کے دیے گئے اہم نمبر پر رابطہ کریں۔

ہر سال مکمل چیک اپ: روزانہ چیک اپ کے ساتھ سالانہ مکمل چیک اپ بھی کروائیں تاکہ ذیابیطس کے کسی بھی اضافی خطرے کا پتہ چل سکے۔

خود انجیکشن کرنے والے مریض: اگر آپ کو انسولین خود انجیکشن دینا پڑتا ہے تو اس کو صحیح طریقہ سے کریں اور اپنے ڈاکٹر سے تربیت لیں۔

یہاں پر دی گئی معلومات کو عمل میں لانے سے پہلے اپنے ڈاکٹر سے رجوع کریں اور ان کے حکم کے مطابق عمل کریں۔ اپنی ذیابیطس کے کنٹرول میں رہنے سے صحت اچھی رہتی ہے اور کمپلیکیشنز کا خطرہ کم ہوتا ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top