مردانہ سپرم کی کمی کا علاج

مردانہ سپرم کی کمی کے لئے علاج کا انتخاب اس کی وجہ پر منحصر ہوتا ہے۔ اگر آپ کو سپرم کی کمی کا شک ہے، تو آپ کو ماہر طبیب سے مشورہ لینا بہتر ہوتا ہے تاکہ ان کے تجربہ کار نظریاتی جائزے کے بعد آپ کو مناسب علاج کی تجویز کی جا سکے۔

مردانہ سپرم کی کمی کے ممکنہ علل درج ذیل ہوسکتے ہیں:

انفیکشنز یا بیماریاں: مثلاً انفیکشنز، شدید بخار یا بیماریاں جیسے مالیٹیپل سکلروسس (Multiple Sclerosis)، سل (Tuberculosis)، یا دیگر عفونتی بیماریاں سپرم کی تخریب کا باعث بن سکتی ہیں۔

نس و عضلات کے مسائل: نس اور عضلات کے خراب ہونے سے بھی سپرم کی تعداد میں کمی ہوسکتی ہے۔

ہارمون کے اختلالات: ہارمون کے خراب ہونے کے باعث بھی سپرم کی تعداد میں کمی ہوسکتی ہے۔

ریڈی ایشن: ریڈی ایشن کے نتیجے میں سپرم کی تعداد میں کمی ہوسکتی ہے۔

ریڈیشن: ریڈیشن کی تنظیم سپرم کے تخریب کا باعث بن سکتی ہے۔

دوائیں: مختلف دوائیں جیسے کے مضر اثرات بھی سپرم کی تعداد میں کمی کا باعث بن سکتی ہیں۔

استعمال نہ کرنے کے باعث کھال کے مسائل: جیسے کے خود بخود تعلیم نہ ہونے، بیشتر احساس، یا دیگر جنسی مسائل بھی سپرم کی کمی کا باعث بن سکتے ہیں۔

علاج کیلئے آپ کے ڈاکٹر مخصوص معائنہ کریں گے اور اپنی طبی تاریخ و جسمانی حالات کا جائزہ لیں گے۔ ان کے بعد آپ کو لاب بطور مرض کا معاملہ تصدیق کریں گے اور مناسب تجویز کی جائے گی جو آپ کے لئے بہترین نتیجے حاصل کرنے میں مدد فراہم کر سکتی ہے۔

مردانہ سپرم کی کمی کا علاج

مردوں میں سپرم کاؤنٹ کم ہونے کی پانچ اہم وجوہات اور اس سے بچنے کے طریقے

مردوں میں سپرم کاؤنٹ کم ہونے کی کئی وجوہات ہو سکتی ہیں۔ یہاں پانچ اہم وجوہات کے بارے میں بات کی جا رہی ہے اور ان سے بچنے کے طریقے بھی دیے جا رہے ہیں:

مادہ جنسی رویہ: بے قابو مادہ جنسی رویہ، روزانہ زیادہ مرتبہ جنسی تعلق بنانے سے، یا منظم نہ ہونے والی جنسی تعلق، ایک علت ہوسکتی ہے۔ مادہ جنسی رویہ کو کنٹرول کرنے کے لئے منظم جنسی تعلق بنائیں، تندرست خوراک پر توجہ دیں، اور روزانہ کم از کم آٹھ گلاس پانی پیں۔

دھمچوں کی تحریر: جب دھمچے زیادہ گرمی سے اندر کی طرف ہوتے ہیں، تو سپرم کی کاؤنٹ کم ہوجاتی ہے۔ دھمچوں کی تحریر سے بچنے کے لئے لوہے کے برتن میں پانی کو بھر کر ایک رات کے لئے چھوڑ دیں اور اس پانی سے دھمچے کی تحریر کریں۔

دھوپ اور گرمی: بکری کا دودھ، گاڑھے اور تندرست پنیر اور پلاؤ مثلاً کئی غذائیں اندر کی جلد کو گرم کر سکتی ہیں، جس سے سپرم کاؤنٹ کم ہوسکتی ہے۔ اس سے بچنے کے لئے گرمی میں دھوپ سے بچیں اور خوبصورت موسموں میں بہار کے دنوں کو فائدہ اٹھائیں۔

غذائیں: غذائیں بھرپور نہ ہونے سے بھی سپرم کاؤنٹ کم ہوسکتی ہے۔ سپرم کاؤنٹ بڑھانے کے لئے سوزش شدہ سبزیاں، پھل، خشک میوہ، گھی کا غیر مضر استعمال، خشک پھل، نیم کے پتے، شہد، اور منی کے متاثرہ خوراک کو شامل کریں۔

ریکریئشنل ڈرگز: بعض ڈرگز اسپرم کاؤنٹ کم کرسکتی ہیں، مثلاً دخن اور الکوہل۔ ان ڈرگز کا استعمال چھوڑ دیں اور صحیح طریقہ سے ریکریئشن کریں۔

یہ اہم وجوہات ہیں جو سپرم کاؤنٹ کم ہونے کا باعث بن سکتی ہیں۔ اگر آپ کو سپرم کی کمی کا شک ہے یا آپ کو سپرم کاؤنٹ میں کمی کی تشخیص ہوئی ہے، تو بہتر ہوتا ہے کہ آپ اپنے مقامی ڈاکٹر یا عظمی ماہر کے پاس جائیں تاکہ وہ مناسب ت

مردوں میں سپرم کاؤنٹ کم ہونے کی پانچ اہم وجوہات اور اس سے بچنے کے طریقے

مردوں میں بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت کم کیوں ہو رہی ہے؟

مردوں میں بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت کم ہونے کے کئی ممکنہ وجوہات ہوسکتی ہیں۔ ان میں سب سے عام وجوہات درج ذیل ہیں:

ناکامی یا کمزور انجکشن: انجکشن کی کمی، یا ناکامی انجکشن کے باعث، سپرم کی تعداد میں کمی ہوسکتی ہے۔

قدیم تکنیک: قدیم تکنیک، مثلاً سنگھاری سیسٹم (Vasectomy) یا بند کرنے والی دھاگہ (Tubal Ligation)، کے باعث بھی سپرم کی تعداد میں کمی ہوسکتی ہے۔

ہارمون کے اختلالات: ہارمون کے اختلالات، جیسے کے تیستوسٹیرون کی کمی، سپرم کی تعداد میں کمی کا باعث بن سکتے ہیں۔

انفیکشن یا بیماریاں: مثلاً انفیکشن یا دوسری عفونتی بیماریاں، جیسے سپرم کو تخریب کر سکتی ہیں۔

دھوپ اور گرمی: بکری کا دودھ، گاڑھے اور تندرست پنیر اور پلاؤ مثلاً کئی غذائیں اندر کی جلد کو گرم کر سکتی ہیں، جس سے سپرم کی تعداد میں کمی ہوسکتی ہے۔

ریکریئشنل ڈرگز: بعض ڈرگز سپرم کی تعداد میں کمی کا باعث بن سکتی ہیں، مثلاً دخن اور الکوہل۔

جنسی مسائل: جیسے کے انزڈریزم (Erectile Dysfunction) یا مختلف جنسی مسائل، سپرم کی کمی کا باعث بن سکتے ہیں۔

اعصابی مسائل: اعصابی مسائل، جیسے کے کینیل نیوروپیٹھی (Tarsal Tunnel Syndrome) یا دوسرے اعصابی مسائل، سپرم کی تعداد میں کمی کا باعث بن سکتے ہیں۔

آپ کو اپنے مقامی ڈاکٹر یا عظمی ماہر کے پاس جانا چاہئے اگر آپ کو سپرم کی تعداد میں کمی کا شک ہے یا اگر آپ کو مخصوص جنسی مسائل یا بھیماری ہیں۔ وہ آپ کی صحتی تاریخ اور جسمانی حالات کا جائزہ لیں گے اور مناسب تشخیص اور علاج کی تجویز کریں گے۔

مردوں میں بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت کم کیوں ہو رہی ہے؟

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top