معدے کی گرمی کا علاج

معدے کی گرمی کا علاج:

معدے کی گرمی کا علاج کرنے کے لئے زیر میں دیے گئے تراکیب اور اقدامات کو اپنا سکتے ہیں:

پانی کی مقدار بڑھائیں: روزانہ کم از کم 8 سے 10 گلاس پانی پیئے تاکہ جسم کو حرارت کا اخراج ممکن ہو۔

خنک غذائیں کھائیں: گرمی کے موسم میں خنک غذائیں جیسے کہ کھیر، دہی، سبزیاں اور پھل کا زیادہ استعمال کریں۔

فلیکس سیڈ (تخمیہ): فلیکس سیڈ معدے کی گرمی کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

چھوٹے مہینے کی دوران سکند بہت کی کوشیش کریں: اگر آپ کو معدے کی گرمی کی وجہ سے تکلیف ہو تو گرم مہینوں میں سکند اور چھوٹے مہینے کی کوشیش کریں کیونکہ ان مہینوں میں جسم میں حرارت کی زیادہ مقدار پیدا ہوتی ہے۔

خوراک کی میعاد کو بند کرنے کی کوشش کریں: زیادہ تیز خوراک کرنے سے بھی معدے کی گرمی بڑھ سکتی ہے۔ دن میں 5 سے 6 بار معتدل خوراک کریں۔

آویں، سفید زرشک، کھیرا اور دہی: ان طبی اشیاء کا استعمال معدے کی گرمی کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

شہد یا کھانے میں نمک کی مقدار کم کریں: زیادہ شہد یا نمک کے استعمال سے معدے کی گرمی میں اضافہ ہوتا ہے۔

دوائیں صرف ڈاکٹر کی مشورے کے بعد استعمال کریں: اگر معدے کی گرمی زیادہ تکلیف دہ ہو، تو ڈاکٹر سے مشورہ کریں اور ان کی تجویز کردہ دوائیں استعمال کریں۔

معدے کی گرمی کے علاج کے لئے ڈاکٹر کی مشورہ لینا بہتر ہوتا ہے تاکہ آپ کو درست اور مناسب تراکیب کی تشخیص حاصل ہو سکے۔

معدے کی گرمی کا علاج

معدے کی گرمی اور منہ کے چھالے

معدے کی گرمی اور منہ کے چھالوں کو کم کرنے کے لئے آپ مندرجہ ذیل تراکیب اور اقدامات کو اپنا سکتے ہیں:

معدے کی گرمی کے لئے:

دائیں طرف لیٹنے کی کوشیش کریں: رات کو سوتے وقت دائیں طرف لیٹنے سے معدے کی گرمی کم ہوتی ہے۔

چھوٹے خوراک کریں: زیادہ خوراک کرنے سے معدے کی گرمی میں اضافہ ہوتا ہے، لہٰذا چھوٹے حصوں میں خوراک کرنے کی کوشیش کریں۔

خنک اشیاء کا استعمال کریں: گرم موسم میں خنک اشیاء مثل دہی، کھیر، تخمیہ، فلیکس سیڈ، کھیرا وغیرہ کا زیادہ استعمال کرنا معدے کی گرمی کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

زیرا کا استعمال: زیرا معدے کی گرمی کو کم کرنے کے لئے مفید ہوتا ہے۔ آپ ذائقہ کے مطابق زیرا کا استعمال کر سکتے ہیں، مثلاً گرم دودھ یا پانی میں زیرا ملا کر پینے سے فائدہ حاصل کیا جا سکتا ہے۔

منہ کے چھالوں کے لئے:

خراب غذائیں اجتناب کریں: چھالوں کی وجہ سے غذائیں خراب ہو جاتی ہیں، لہٰذا خراب یا زیادہ تیز غذائیں اجتناب کریں۔

منظم منہ کی صفائی کریں: منہ کو منظم طریقے سے صفا کرنا منہ کے چھالوں کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

بھرپور پانی پیئے: پانی کی کمی منہ کے چھالوں کی وجہ سے بھی ہو سکتی ہے، لہٰذا روزانہ کم از کم 8 سے 10 گلاس پانی پیئے۔

شہد کا استعمال: شہد منہ کی صفائی کے لئے مفید ہوتا ہے۔ شہد کو گرم پانی میں ملا کر پینے سے منہ کی صفائی میں مدد مل سکتی ہے۔

نوٹ:

اپنے دوائیں ڈاکٹر کی مشورے کے بغیر نہ لیں۔

مندرجہ بالا تراکیب کو صرف مشورہ لینے کے بعد استعمال کریں۔

اگر آپ کو معدے کی گرمی یا منہ کے چھالوں کی وجہ سے شدید تکلیف ہو تو فوراً ڈاکٹر سے مشورہ لیں۔

معدے کی گرمی اور منہ کے چھالے

معدے کی گرمی دور کرنے میں مددگار ٹوٹکے

معدے کی گرمی کو دور کرنے میں مددگار ٹوٹکے:

اجوائن کا پانی: اجوائن کا پانی معدے کی گرمی کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔ ایک چائے کچھ اجوائن کو ایک گلاس پانی میں ڈال کر ابالیں اور پینے سے فائدہ حاصل کریں۔

دھنیا کے بیج: دھنیا کے بیج کا پانی بنا کر پینا بھی معدے کی گرمی کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

کھیرا: کھیرا معدے کی گرمی کو کم کرنے کا موثر اپشن ہے۔ کھیرا کو کٹ کر نمک لگا کر کھانا بھی مفید ہوتا ہے۔

شہد کا استعمال: گرمی کے موسم میں شہد کا استعمال بھی معدے کی گرمی کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

بتاسلفیورن کا استعمال: بتاسلفیورن معدے کے امراض کیلئے مددگار ہوتا ہے، لیکن اس کا استعمال صرف ڈاکٹر کی مشورہ لینے کے بعد کریں۔

صاف پینکر پانی: صبح کو اٹھ کر خالی پیٹ صاف پینکر پانی پینے سے معدے کی گرمی کم ہوتی ہے۔

سبزیاں اور پھل: خنک اشیاء مثلاً کھیرا، کھربوزہ، تربوز، کھٹی مٹھیاں، سبزیاں وغیرہ کا زیادہ استعمال کرنا معدے کی گرمی کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

نوٹ:

انفرادی معلومات کے لئے اپنے ڈاکٹر سے مشورہ لیں۔

تجویز شدہ دوائیں ڈاکٹر کی مشورے کے بغیر نہیں لیں۔

توجہ: یہ ٹوٹکے گرمی کو کم کرنے میں مدد فراہم کر سکتے ہیں، مگر ان کا استعمال معقولیت سے کریں اور ضروری ہے کہ ڈاکٹر کی مشورہ لیں قبل از استعمال۔

معدے کی گرمی دور کرنے میں مددگار ٹوٹکے

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top