کولیسٹرول کا دیسی علاج

کولیسٹرول کا دیسی علاج (Desi Ilaj) مختلف طریقوں سے کیا جا سکتا ہے. یہاں کچھ آسان اور مؤثر طریقے دیے گئے ہیں:

لیہمن چائے:
لیہمن چائے کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کر سکتی ہے. ایک پیالی پانی میں ایک چمچ لیہمن چائے ڈال کر اسے بونے اور پینے سے پہلے اور بعد کھانے کے بعد پی سکتے ہیں.

کھانے میں تیلوں کی کمی:
زیادہ تر بدیہتی کولیسٹرول مواد تیلوں میں پایا جاتا ہے. تیلوں کی مقدار کم کرنے سے کولیسٹرول کم ہوتا ہے. دیسی کھانے میں زیتون کا تیل، سرسوں کا تیل، گائے کا گھی، اور کوکونٹ اور کھوپرے کا تیل شامل کریں.

سبزیوں اور پھلوں کا استعمال:
سبزیوں اور پھلوں کو اپنی روزانہ کی دائیت میں شامل کریں. ان میں فائبر، وٹامنز، اور انٹی آکسیڈنٹس پائے جاتے ہیں جو کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتے ہیں.

چکنا:
چکنا کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے. اس کو دودھ یا دہی کے ساتھ کھانے کا طریقہ پسند کیا جاتا ہے.

مخصوص طرح کی چائے:
کچھ چائے جیسے کے گرین چائے اور چائے پتیوں کی چائے کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کر سکتی ہیں.

روزانہ کمزور ترین کارروائیاں:
روزانہ کمزور ترین کارروائیوں جیسے کہ سیر کرنا، واکنگ، یوگا، اور تای چی روزانہ انجام دیں. یہ جسم کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتے ہیں.

غیر معصوم کھانے:
غیر معصوم کھانے جیسے کہ جنک فوڈ، فرائیڈ فوڈ، چینی، اور نمکین چیزوں کی مداخلت کو کم کریں.

آزمودہ دوائیں:
کچھ ہربل دوائیں اور ہومیوپیتھک دوائیں بھی کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتی ہیں. یہ دوائیں صرف اپنے ڈاکٹر کی مشورہ کے بعد استعمال کریں.

کولیسٹرول کو کم کرنے کے لئے کسی بھی دیسی علاج کو شروع کرنے سے پہلے اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کریں. ڈاکٹر آپ کو آپ کے کولیسٹرول کی سطح کے مطابقت سے مناسب تدابیر اور دوائیں تجویز کریں گے.

کولیسٹرول کاعلاج

کولیسٹرول کا علاج عام طور پر دو طریقوں سے کیا جاتا ہے: غیر دوائی اور دوائیاتی علاج۔ ذیل میں کولیسٹرول کے مختلف اقسام کے علاج کے طریقے دیئے گئے ہیں:

غیر دوائی علاج:

غذائی تبدیلی: اپنے کھانے کی عادات میں تبدیلی کریں. کم چکنا گوشت، کم چکنا دودھ، کم میٹھا، اور کم تیل کا استعمال کریں۔ زیادہ فائبر کی مواد پر مبنی خوراک منوا کریں جیسے کے سبزیاں، پھل، اور پورے انسانی اناج کی محمولت۔

ورزش: روزانہ ورزش کریں، جیسے کے واکنگ، دوڑنا، یوگا، یا اور کوئی پسند کردہ ورزش. ورزش کرنے سے کولیسٹرول کم ہوتا ہے اور جسم کو صحت مند رکھنے میں مدد ملتی ہے۔

وزن کم کریں: اگر آپ کا وزن زیادہ ہو تو وزن کم کرنے کی کوشش کریں. وزن کم کرنے سے کولیسٹرول کم ہوتا ہے.

نوشادری کم کریں: تنباکو استعمال کرنا چھوڑ دیں اور الکوحل کی مقدار کو کم کریں.

دوائیاتی علاج:

ڈاکٹر کی مشورہ: آپ کے ڈاکٹر کی مشورہ اور نصیحت کے مطابق دوائیں استعمال کریں. کچھ دوائیں کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتی ہیں جیسے کے سٹیٹنز، فائبر اسکیدز، اور نیسین.

منظم چیک اپ: منظم طور پر ڈاکٹر کی پیشگوئی کے مطابق چیک اپ کرایں تاکہ آپ کا کولیسٹرول سطح کنٹرول میں رہے۔

ایکسرسائز: ڈاکٹر کی رہنمائی کے مطابق ورزش کریں اور دوائیں منظم طور پر استعمال کریں.

کولیسٹرول کے علاج کو دوائیاتی طریقے پر کرنے کے لئے صرف اپنے ڈاکٹر کی مشورہ لیں، اور دوائیں صرف ان کے رہنمائی کے مطابق استعمال کریں۔ یہ مہمان علاج کی طرح جاری رہتا ہے اور آپ کی صحت کو بہتر بناتا ہے.

کولیسٹرول کی علامات

کولیسٹرول کی بلندی کے بغیر کسی علامت کے بغیر بھی ہو سکتی ہے، اور بہت سی بار کولیسٹرول کی بلندی کو “سنٹومی” بندوبست کے طور پر نہیں دیکھا جاتا ہے. یعنی کہ شخص کولیسٹرول کی بلندی کا شکار ہو سکتا ہے اور اس کو محسوس نہیں کرتا۔

بعض افراد کولیسٹرول کی بلندی کے نتائج کے طور پر مندرجہ ذیل علامات کا شکار ہوتے ہیں:

شدید تھکاوٹ یا کمزوری: کبھی کبھار کولیسٹرول کی بلندی کی صورت میں شدید تھکاوٹ یا کمزوری کا احساس ہوتا ہے.

دل کی بھاریپن: دل کی بھاریپن یا درد کی بندوبست کبھی کبھار کولیسٹرول کی بلندی کی علامت ہوتی ہے. اس درد کو دل کا دورہ (انفارکشن) بھی کہا جاتا ہے.

دل کی دھڑکن کی تیزی: دل کی دھڑکن کی تیزی یا ناقص دل کی دھڑکن بھی کولیسٹرول کی بلندی کی وجہ سے ہوتی ہے.

شدید کمی: کبھی کبھار کولیسٹرول کی بلندی کی صورت میں شدید کمی کی علامت ہوتی ہے. کمی کے منظر عام پر کمر درد، ہڈیوں کی کمی، اور ہڈیوں کی شکستی شامل ہوتی ہیں.

زیریں آنکھوں کی رنگ میں تبدیلی: کبھی کبھار کولیسٹرول کی بلندی کی وجہ سے زیریں آنکھوں کی رنگ میں تبدیلی ہوتی ہے.

یہ علامات صرف کولیسٹرول کی بلندی کی وجہ سے نہیں ہوتیں اور کبھی کبھار دوسرے صحت سے متعلق مسائل کی بندوبست کے طور پر آتی ہیں۔ کولیسٹرول کی صحیح تشخیص اور علاج کے لئے اپنے ڈاکٹر کی مشورہ کریں، اور منظم طور پر صحت کی چیک اپ کرایں تاکہ کسی بھی صحتی مسئلے کو جلد اور درستی سے پہچانا جا سکے۔

کولیسٹرول بڑھنے پرعلامات

کولیسٹرول کی بلندی کے بغیر کسی علامت کے بغیر بھی ہوتی ہوتی ہے، جس کی بندوبست آپ کو معلوم نہیں ہوتی. کولیسٹرول کی بلندی سالوں تک بیماریوں کی شکل میں ظاہر ہوتی ہے جبکہ کبھی کبھار آپ کو کوئی علامت نظر نہیں آتی۔ یہ وجہ ہے کہ کولیسٹرول کو “صامت کلید” کہتے ہیں کیونکہ آپ کو علامتوں کے بغیر بھی پریشان کر سکتا ہے.

کولیسٹرول کی بلندی کی صورت میں زیریں عام علامات میں سے کچھ علامات درج ذیل ہوتی ہیں:

دل کی دھڑکن کی تیزی: کبھی کبھار کولیسٹرول کی بلندی کی وجہ سے دل کی دھڑکن تیز ہوتی ہے، جس کو تاچیکاردیا یا انفارکشن کہا جاتا ہے.

دل کا درد: دل کی دھڑکن میں تیزی کے ساتھ درد کا احساس ہوتا ہے، جو دل کی بھاریپن کی علامت ہوتی ہے.

چست پسینہ: کولیسٹرول کی بلندی سے پسینے کا زیادہ بننا یا چست پسینہ بننا بھی ممکن ہوتا ہے.

نفسیاتی تناو: کولیسٹرول کی بلندی کی وجہ سے انسان میں نفسیاتی تناو کی مقدار بڑھ سکتی ہے.

کمی: کولیسٹرول کی بلندی کی صورت میں ہڈیوں کی کمی یا کمی کا احساس ہوتا ہے، جو منظر عام پر کمر درد کی صورت میں آتا ہے.

آنکھوں کی رنگ میں تبدیلی: کبھی کبھار کولیسٹرول کی بلندی کی وجہ سے آنکھوں کی سفید حصے کی رنگ میں تبدیلی آ سکتی ہے.

ناقص دل کی دھڑکن: کبھی کبھار کولیسٹرول کی بلندی کی صورت میں ناقص دل کی دھڑکن کا احساس ہوتا ہے، جس کو آریتھمیا کہا جاتا ہے.

یہ علامات صرف کولیسٹرول کی بلندی کی وجہ سے نہیں ہوتیں اور کبھی کبھار دوسرے صحت سے متعلق مسائل کی بندوبست کے طور پر آتی ہیں۔ کولیسٹرول کی صحیح تشخیص اور علاج کے لئے اپنے ڈاکٹر کی مشورہ کریں، اور منظم طور پر صحت کی چیک اپ کرایں تاکہ کسی بھی صحتی مسئلے کو جلد اور درستی سے پہچانا جا سکے۔

قدرتی نعمتوں کے استعمال سے کولیسٹرول پر قابو پائیں

کولیسٹرول کو قابو میں رکھنے اور اس کو کم کرنے کے لئے قدرتی نعمتوں کا استعمال کرنا بہترین طریقہ ہوتا ہے۔ قدرتی طریقوں سے کولیسٹرول کم کرنے کے لئے مندرجہ ذیل چیزوں کو اپنی روزانہ کی زندگی میں شامل کر سکتے ہیں:

سبزیاں اور پھل:
سبزیوں اور پھلوں کو اپنی دائیت میں شامل کرنا کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔ ان میں فائبر کی بھرمار پائی جاتی ہے جو کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

چکنا:
کچھ اہم غذائی تیلوں کا استعمال کولیسٹرول کو کم کرنے میں مفید ہوتا ہے۔ ان میں زیتون کا تیل، سرسوں کا تیل، گائے کا گھی، اور کوکونٹ اور کھوپرے کا تیل شامل ہیں۔

لیہمن چائے:
لیہمن چائے کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کر سکتی ہے۔ ایک پیالی پانی میں ایک چمچ لیہمن چائے ڈال کر اسے بونے اور پینے سے پہلے اور بعد کھانے کے بعد پی سکتے ہیں۔

ادرک:
ادرک کا استعمال کولیسٹرول کو کم کرنے میں مفید ہوتا ہے۔ آپ ادرک کو کچھ طریقوں سے اپنی طعام میں شامل کر سکتے ہیں، جیسے کے چائے، سوپ، یا سبزیوں کے ساتھ۔

تیلیس کی بھوسی:
تیلیس کی بھوسی میں پلی انسٹواریٹڈ فیٹس کو کم کرنے والے مواد پائے جاتے ہیں جو کولیسٹرول کم کرتے ہیں۔

کھانے میں نمک کی کمی:
نمک کی کمی کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتی ہے۔ اس کی بجائے زیریں نمک استعمال کریں، جیسے کہ کالا نمک یا ہلدی نمک۔

یہ طریقے قدرتی طریقے سے کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتے ہیں، لیکن اگر آپ کا کولیسٹرول بہت زیادہ ہو تو اپنے ڈاکٹر کی مشورہ لیں اور وہ آپ کو دوائیں تجویز کریں گے۔ کولیسٹرول کی تشخیص اور علاج کو ماہر طبی ڈاکٹر کی مشورہ کے بعد کیا جاتا ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top