breast cancer ki alamat

بیماری کے مختلف مراحل میں سینے کے کینسر کی علامات مختلف ہو سکتی ہیں۔ یہاں کچھ عام علامات دی گئی ہیں جو بریسٹ کینسر کی اشارے ہو سکتی ہیں:

سینے یا اندرونی حصے میں درد یا تکلیف کی شکایت

سینے کی جلن یا کھارش

سینے کے حصوں میں نیپل سے غیر معمولی رطوبت یا خارش

سینے کے حصوں کی شکل، سائز، یا رنگ میں تبدیلی

نیپل کی اندرونی جانب کوئی خارش یا خشکی

سینے کی جلن یا درد کی شدت میں اضافہ

سینے کے حصوں یا اردکوں میں سوزش کا احساس

سینے کے حصوں میں غدود کی حالت میں تبدیلی (سخت یا نرم ہونا)

سینے کے حصوں یا نیپل کا انفیکشن یا افراطی حالت

یہ صرف عام اشارات ہیں اور ہر صورت میں ان علامات کا ضروری نہیں ہوتا کہ بریسٹ کینسر کی وجہ سے ہوں۔ بریسٹ کینسر کی تشخیص اور علامات کی تصدیق کے لئے طبی ماہر کی مشورہ لینا ضروری ہوتا ہے۔

breast cancer ki alamat

breast cancer ki age kitni hoti hai

بریسٹ کینسر کی عمر ہر فرد کے لئے مختلف ہوسکتی ہے، لیکن عموماً 40 سال سے زیادہ عمر والی عورتوں میں زیادہ موجود ہوتا ہے۔ عورتوں میں بریسٹ کینسر کا خطرہ عمر کے ساتھ بڑھتا ہے، جبکہ زیادہ تر مماثلتوں میں یہ 50 سال کے بعد ہوتا ہے۔

لیکن، یہ بھی ضروری ہے کہ کسی بھی عمر میں بریسٹ کینسر کا خطرہ ہوسکتا ہے، اسلئے منظم میموگرافی اور چیک اپس کو دھیان میں رکھنا بہت اہم ہے۔ آپ کے خاندان میں کسی کو بھی بریسٹ کینسر ہو سکتا ہے، تو آپ اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کر کے بناوٹی طور پر جائزہ لینے کو نہ بھولیں۔

بریسٹ کینسر کی عمر مختلف عوامل پر منحصر ہوتی ہے، جیسے کہ جینیتی مواد کی وراثت، زندگی کی شہرت، صحت مند زندگی اور دوسرے صحت سے متعلق عوامل۔

عموماً، عورتوں کے لئے بریسٹ کینسر کا خطرہ 40 سال سے زیادہ عمر والی عورتوں میں زیادہ ہوتا ہے، اور زیادہ تر مماثلتوں میں 50 سال کے بعد ہوتا ہے۔ لیکن، کچھ مماثلتیں ایسی ہوتی ہیں جن میں بریسٹ کینسر کی تشخیص کی عمر کم بھی ہوسکتی ہے۔

ماضی کی طرف سے، بریسٹ کینسر عموماً زیادہ عمر والی عورتوں کو متاثر کرتا تھا، لیکن آج کل نوجوان خواتین میں بھی یہ مسئلہ پایا جاتا ہے۔

بریسٹ کینسر کی تشخیص کو جلدی شناخت کرنا اہم ہوتا ہے تاکہ علاج کیلئے جلدی اقدامات اٹھائے جا سکیں۔ اگر آپ کو خود یا کسی دوسرے شخص کو بریسٹ کینسر کے علامات نظر آتے ہیں تو جلد اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کریں تاکہ درست تشخیص اور علاج کی فرصت مل سکے۔

breast cancer ki age kitni hoti hai

breast cancer ki nishaniyan

بریسٹ کینسر کی علامات اور نشانیاں خواتین میں مختلف ہو سکتی ہیں۔ نیچے کچھ عام علامات دی گئی ہیں، لیکن یاد رہے کہ صرف علامات کے اساس پر آپ کو ڈاکٹر سے مشورہ کرنا چاہئے:

بریسٹ میں تبدیلی: اگر آپ کو اپنے سینے میں کسی قسم کا درد، سوجن یا دیگر تبدیلی محسوس ہوتی ہے تو یہ ایک نشانی ہو سکتی ہے۔

گولا یا گانٹھے: اگر آپ کو سینے میں کسی قسم کی گانٹھ یا گولا محسوس ہو، جو نارمل سے مختلف ہو، تو اسے بھی سنبھال جانا چاہئے۔

سینے کا درد: اگر آپ کو سینوں میں ضرورت سے زیادہ درد محسوس ہو، جو وقت کے ساتھ بڑھتا ہو یا کم ہوتا ہو، تو یہ بھی ایک نشانی ہو سکتی ہے۔

سینے کی روشنی: سینوں کی روشنی یا رنگ میں تبدیلی، سینوں کی جلد پر دیکھنے والے کوئی تبدیلی، یا کھلکھلاہٹ ہو، تو یہ بھی ایک نشانی ہو سکتی ہے۔

خون آنا: اگر سینے سے خون یا دوسرے قسم کے رطوبتی مادے نکلتے ہیں، تو یہ بھی کینسر کی نشانی ہو سکتی ہے۔

نپل میں تبدیلی: سینے کے نپل میں دیکھنے والی کسی بھی قسم کی تبدیلی، جیسے اندر کی طرف دھسنا، کھسکنا یا رنگ میں تبدیلی، یہ بھی ایک نشانی ہو سکتی ہے۔

سوزش اور درد: سینوں میں سوزش یا درد کا محسوس ہونا، جو عام درد سے مختلف ہو، یہ بھی کینسر کی ممکنہ علامت ہو سکتی ہے۔

سینے کی گلاپن میں تبدیلی: سینوں کی گلاپن میں تبدیلی، سینوں میں کھینچاو کم ہونا، یا جلد کے اوپر دیکھنے والی کسی بھی قسم کی تبدیلی کو دھیان سے دیکھیں۔

اگر آپ کو ان میں سے کوئی بھی نشانی یا علامت محسوس ہوتی ہے، تو جلد سے جلد ایک ڈاکٹر سے رابطہ کرنا ضروری ہوتا ہے۔ آپ کا ڈاکٹر آپ کی شخصی حالات کو دیکھ کر صحیح تشخیص لگا کر آپ کو مناسب مشورہ دے سکتے ہیں۔ بریسٹ کینسر کی پہچان اور وقت پر علاج کے لئے منظم طور پر میموگرام کروانا اور ڈاکٹر کی مشورہ لینا مہتواپورن ہے۔

breast cancer ki nishaniyan

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top