kali khansi

کالی کھانسی کا مقصد اکثر زخمی یا گلوں میں کچھ جمی ہوئی بلغم کے باعث ہوتا ہے جو کہ اکثر زخمی یا گلوں میں اکٹھتا ہے۔ یہ کھانسی بعض اوقات خود بخود ختم ہو جاتی ہے جبکہ بعض اوقات اس کا علاج ضروری ہوتا ہے۔

کالی کھانسی کے علاج کے مختلف طریقے ہوتے ہیں جن میں سے کچھ درج ذیل ہیں:

گرم پانی کا استعمال: گرم پانی پینا اور گرم پانی کے گرگرے کرنا کالی کھانسی کے درد کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

شہد اور لیموں کا استعمال: شہد اور لیموں کو ملا کر استعمال کرنا بھی کالی کھانسی کو کم کرنے میں مدد دیتا ہے۔

سالانہ چھٹی: اگر کالی کھانسی جلدی طور پر بڑھ رہی ہے تو چھٹی لینا بھی فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔

بخارات کا استعمال: کھانسی کو کم کرنے کے لئے ہوا میں بخارات کرنے والے آلات کا استعمال بھی کیا جا سکتا ہے۔

دوائیں: اگر کالی کھانسی زیادہ دنوں تک برقرار رہتی ہے تو ڈاکٹر کی مشورہ لینا ضروری ہوتا ہے جو آپ کو مناسب دوائیں تجویز کر سکتے ہیں۔

گرم خوراک کی پرہیز: گرم خوراکوں سے اجتناب کرنا بھی کالی کھانسی کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

اگر کالی کھانسی زیادہ عرصے تک برقرار رہتی ہے یا ایسی صورت میں زندگی پر اثر انداز کرتی ہے تو آپ کو اپنے ڈاکٹر سے مشورہ لینا چاہئے تاکہ مناسب علاج کی تشخیص کی جا سکے۔

kali khansi

kaali khansi

کالی کھانسی کا اصطلاح عموماً ایسی کھانسی کو واقع کرنے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے جو کہ گلے کے نیچے کی طرف سے شروع ہوتی ہے اور جو زیادہ مخاط پیدا کرتی ہے۔ اس کے ساتھ اکثر گلے میں خشکی، اختناق، یا دماغی اختلال بھی ہوتے ہیں۔

کالی کھانسی کی وجوہات:

زکام یا سردی: مخصوص طور پر موسمِ سرما میں زکام یا سردی کے باعث کالی کھانسی کا اظہار ہوتا ہے۔

زخمی گلہ: گلے میں کھانسی کے زخم ہونے کی صورت میں بھی کالی کھانسی کا اظہار ہو سکتا ہے۔

خراب ہوا کی وجہ سے: گندے ہواؤں کی وجہ سے بھی کالی کھانسی ہوتی ہے جیسے کہ شہری علاقوں میں زیادہ خراب ہوا کی وجہ سے۔

دھوپ سے بھی: زیادہ دھوپ میں چلنے سے بھی گلے کی پسینے کی نشوونما ہو سکتی ہے جس سے کالی کھانسی کا اظہار ہوتا ہے۔

کالی کھانسی کا علاج:

پنی بہ پنی پیئیں: گرم پانی پینے سے گلے کی پسینے کی نشوونما کم ہوتی ہے اور کالی کھانسی کی شدت کم ہوتی ہے۔

گرم بخارات: گلے کی نشوونما کو کم کرنے کے لئے بخارات لینا بھی مفید ثابت ہوتا ہے۔

شہد اور لیموں کا استعمال: شہد اور لیموں کو ملا کر استعمال کرنا بھی کالی کھانسی کو کم کرنے میں مدد دیتا ہے۔

دوائیں: اگر کالی کھانسی زیادہ دنوں تک برقرار رہتی ہے تو ڈاکٹر کی مشورہ لینا ضروری ہوتا ہے جو آپ کو مناسب دوائیں تجویز کر سکتے ہیں۔

گرم خوراک کی پرہیز: گرم خوراکوں سے اجتناب کرنا بھی کالی کھانسی کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

اگر کالی کھانسی زیادہ عرصے تک برقرار رہتی ہے یا آپ کو اس کالی کھانسی کی بری طرح کی صورت میں پیش آ رہی ہے، تو آپ کو اپنے ڈاکٹر سے مشورہ لینا چاہئے تاکہ مناسب علاج کی تشخیص کی جا سکے۔

kaali khansi

kali khansi ki alamat

کالی کھانسی کی علامات عموماً مندرجہ ذیل ہوتی ہیں:

کھانسنے کی شدت: کالی کھانسی کی شدت زیادہ ہوتی ہے اور عموماً گلے کے نیچے سے شروع ہوتی ہے۔

بلغم: کالی کھانسی کے ساتھ بلغم کی پیدائش ہوتی ہے جو کہ آپ کی گلے میں جمتی ہے اور کھانسنے کے وقت نکلتی ہے۔

خشکی: کھانسنے کے ساتھ خشکی کی حالت بھی ہوتی ہے جو آپ کو اختناق محسوس کرنے کا باعث بن سکتی ہے۔

گلے کی خرابی: کھانسی کی بنا پر گلے میں خشکی اور خرابی کی حالت پیدا ہو سکتی ہے جس سے آپ کو آواز کا بھی فرق محسوس ہوتا ہو۔

دماغی اختلالات: کالی کھانسی کے باعث دماغی اختلالات بھی پیدا ہو سکتے ہیں جیسے کہ سر درد، خستگی، یا غیرتوقع مندرجہ ذیل حالتوں کی صورت میں اختلاف کرنا۔

جسم میں خستگی: زیادہ کھانسنے کی بنا پر آپ کو جسم میں خستگی محسوس ہو سکتی ہے اور آپ کی مجموعی صحت پر اثر بھی پڑ سکتا ہے۔

نیزہ والی کھانسی: کھانسنے کے ساتھ نیزہ بھی آ سکتا ہے جس سے آپ کی آنکھوں میں خارش یا آب گرنے کی حالت پیدا ہو سکتی ہے۔

نزلے کے علامات: کھانسنے کے ساتھ زکام کی علامات بھی شامل ہو سکتی ہیں جیسے کہ بوکھار، چھینکیں، آنکھوں سے پانی آنا، وغیرہ۔

یہ علامات کالی کھانسی کی عام علامات ہیں، لیکن آپ کو اگر لمبے وقت تک کھانسی رہتی ہے یا اس میں خون آتا ہے یا دماغی اختلالات ہوتے ہیں تو آپ کو فوراً اپنے ڈاکٹر کی مشورہ لینا چاہئے۔

kali khansi ki alamat

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top